دبئی میں سال نو کا استقبال منفرد اور نئے انداز میں

سال نو کے استقبال کے لیے آتش بازی کے بجائے برج الخلیفہ کی چوٹی سے روشنیوں کی پھلجھڑیاں چھوڑی جائیں گی

سال نو کے استقبال کے لیے آتش بازی کے بجائے برج الخلیفہ کی چوٹی سے روشنیوں کی پھلجھڑیاں چھوڑی جائیں گی

دبئی ۔۔۔ نیوز ٹائم

سال نو کی آمد آمد ہے اور پوری دنیا کی نگاہیں اس وقت متحدہ عرب امارات کے منفرد تجارتی اور عالمی مرکز دبئی کے روایتی استقبال پر مرکوز ہیں۔ دبئی میں سال نو کے خیر مقدم کے لئے روایتی آتش بازی کا نظارہ کرنے والے تمام افراد کے لیے خبر ہے کہ دبئی انتظامیہ اس بار سال نو کا استقبال روایتی آتش بازی کے بجائے لیزر شعاعوں کی مدد سے کیا جائے گا۔ ایسا اس لیے کیا جا رہا ہے کیونکہ آتش بازی کی نسبت یہ طریقہ کار زیادہ محفوظ اور بے ضرر ہے۔ متحدہ عرب امارات کے بڑے تعمیراتی گروپ اعمار کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں بتایا گیا ہے کہ سال نو کے استقبال کے لیے آتش بازی کے بجائے برج الخلیفہ کی چوٹی سے روشنیوں کی پھلجھڑیاں چھوڑی جائیں گی۔ اعمار گروپ کے سال نو کی تقریبات سے متعلق کمیٹی کے رکن احمد ثانی المطروشی نے بتایا  کہ اس بار برج الخلیفہ میں آتش بازی نہیں کی جائے گی بلکہ لیزر شعاعوں کی نمائش اور اس کے ساتھ مخصوص موسیقی کا اہتمام کیا گیا ہے۔دبئی میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب میں انہوں نے کہا کہ نئے سال کی آمد کی خوشی میں استقبال کا پرانا طریقہ کار تبدیل کر دیا گیا ہے۔ اس بار ہم دنیا کو ایک نئی چیز دکھائیں گے۔ یہ نئی تبدیلی بے شمار فوائد کے ساتھ اپنی منفرد خوبصورتی کا بھی احساس دلائی گی۔ ادھر دوسری جانب دبئی پولیس کا کہنا ہے کہ برج الخلیفہ میں لیزر کی نمائش کے موقع پر 1.5 ملین زائرین کی آمد متوقع ہے۔دبئی پولیس کے ایک عہدیدار نے بریگیڈیئر بداللہ الغیثی نے کہا کہ سال نو کے موقع پر برج الخلیفہ سمیت دبئی میں دیگر تقریبات میں آنے والے مقامی اور غیر ملکی زائرین کو ہر ممکن تحفظ فراہم کیا جائے گا۔

No comments.

Leave a Reply